Ali Jee | Jan Ali Akbar | 1441 / 2019

علی جان علی اکبر
علی جان علی اکبر
واویلاہ واویلاہ شد واویلاہ واویلاہ شد
شبیہ پیغمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر
اے جان علی اکبر
بیٹا علی اکبر مادر کو پکارو واویلاہ واویلاہ شد
غمزدہ مادر کو چہرہ تو دکھا دو واویلاہ واویلاہ شد
خاک سے اٹھو مجھ کو بلا لو
ارے ماہ پریشان کہاں ہو میرے دلبر
شبیہ پیغمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر
اے جان علی اکبر
قید ہوئی بیٹا زندان چلی ماں واویلاہ واویلاہ شد
ارے سارے شہیدوں کا اللہ نگھباں واویلاہ واویلاہ شد
گھر ہوا ویراں آو میری جاں
ارے ہو گیا سجاد اکیلا میرا دلبر
شبیہ پیغمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر
اے جان علی اکبر
ماں کا یہ ارماں تھا تجھے دلہہ بناتی واویلاہ واویلاہ شد
ارے ماں تیری دلہن کو نازوں سے سجاتی واویلاہ واویلاہ شد
ہو نہیں پائی آس یہ پوری
ارے ایسے گئے آئے نہ میداں سے پلٹ کر
شبیہ پیغمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر
اے جان علی اکبر
ماں ہے رسن بستہ سر تیرا سناں پر واویلاہ واویلاہ شد
ارے بلوائے اعدا میں لایا ہے مقدر واویلاہ واویلاہ شد
اے میرے پیارے نوک سناں سے
ارے دیکھ لے ماں تیری ہے بلوے میں کھلے سر
شبیہ پیغمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر
اے جان علی اکبر
بیٹا علی اکبر مادر کا ہے وعدہ واویلاہ واویلاہ شد
ارے سوگ مناؤں گی تا عمر تمھارا واویلاہ واویلاہ شد
اب نہ پیوں گی ٹھنڈا میں پانی
ارے اب نہ میں بیٹھوں گی سائے میں جا کر
شبیہ پیغمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر
اے جان علی اکبر
پوچھ لیا مجھ سے صغریٰ نے جو تیرا واویلاہ واویلاہ شد
ارے کیسے بتاؤں گی اکبر نہیں آیا واویلاہ واویلاہ شد
روئے گی صغریٰ تڑپے گی صغریٰ
ارے تیرے بنا کیسے جئے گی تیری خواہر
شبیہ پیغمبر ہائے ہائے علی اکبر
کیسے جئے گی تیرے بن ہائے یہ مادر
اے جان علی اکبر
واویلاہ واویلاہ شد واویلاہ واویلاہ شد
واویلاہ واویلاہ شد واویلاہ واویلاہ شد
Thanks! 

https://lyricstranslate.com/en/ali-jee-jan-ali-akbar-lyrics.html

Leave a Reply

Your email address will not be published.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.