Ab To Bus Aik Hi Dhun Hai | Muhammad Owais Raza Qadri | 2016

Ab To Bus Aik Hi Dhun Hai | Muhammad Owais Raza Qadri | 2016

آخری عمر میں کیا رونقِ دنیا دیکھوں
اب تو بس ایک ہی دُھن ہے کہ مدینہ دیکھوں

جالیاں دیکھوں کہ دیوار و در و بامِ حرم
اپنی بے نور نگاہوں سے میں کیا کیا دیکھوں

میں کہاں ہوں یہ سمجھ لوں تو اٹھاؤں نظریں
دل جو سنبھلے تو میں پھر گنبدِ خضریٰ دیکھوں

میرے مولا میری آنکھیں مجھے واپس کر دے
تا کہ اس بار میں جی بھر کے مدینہ دیکھوں

جن گلی کوچوں سے گزرے ہو کبھی میرے حضورﷺ
ان میں تا حدِ نظر نقشِ کف پا دیکھوں

تا کہ آنکھوں کا بھی احسان اٹھانا نہ پڑے
قلب خود آئینہ بن جائے میں اتنا دیکھوں

کاش اقبال ؔ یونہی عمر بسر ہو میری
صبح کعبے میں اور شام کو طیبہ دیکھوں

صلی اللّٰہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم

Leave a Reply

Your email address will not be published.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.